یاسر آٹھ دن کیلئے عالمی نمبر ایک باؤلر

26 July 2016

انگلینڈ کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میچ میں ایک وکٹ کے عوض 266 رنز دینے والے یاسر شاہ کو بری کارکردگی کا خمیازہ بھگتنا پڑ گیا ہے اور وہ آئی سی سی کی عالمی درجہ بندی میں پہلے سے پانچویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں۔

لارڈز ٹیسٹ میں دس وکٹیں لینے کے بعد یاسر شاہ عالمی درجہ بندی میں ترقی کرتے ہوئے پہلے نمبر پر پہنچ گئے تھے لیکن اولڈ ٹریفورڈ میں 266 رنز کے عوض محض ایک وکٹ کے حصول کے سبب لیگ اسپنر چار درجہ تنزلی کے بعد پانچویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں۔

دلچسپی امر یہ کہ یاسر محض آٹھ دن تک اس منصب پر فائز رہے اور دوسرے ٹیسٹ میچ کے اختتام کے ساتھ ہی انہیں اس اعزاز سے ہاتھ دھونا پڑا۔

ہندوستانی اسپنر روی چندرہ ایشون کو ویسٹ انڈیز کے خلاف سات وکٹیں لینے کا انعام عالمی نمبر ایک باؤلر بننے کی صورت میں ملا ہے جبکہ جیمز اینڈرسن بھی ایک درجہ ترقی پاکر دوسرے نمبر پر پہنچ گئے ہیں۔

یاسر کی تنزلی کے سبب اسٹورٹ براڈ اور ڈیل اسٹین ایک ایک درجہ ترقی کرتے ہوئے بالترتیب تیسری اور چوتھی پوزیشن پر موجود ہیں۔

باؤلرز کی ٹیسٹ رینکنگ میں چھٹے سے دسویں نمبر تک مزید کوئی تبدیلی نہیں ہوئی۔

بلے بازوں میں اسٹیون اسمتھ پہلے نمبر پر براجمان ہیں لیکن اولڈ ٹریفورڈ میں عمدہ بیٹنگ کرنے والے جو روٹ دو درجہ ترقی کرتے ہوئے دوسرے نمبر پر پہنچ گئے ہیں اور اسی وجہ سے کین ولیمسن تیسرے اور ہاشم آملا چوتھے نمبر پر پہنچ گئے۔

مصباح الحق بھی ترقی پا کر آٹھویں بنمبر پر آ گئے ہیں جبکہ یونس خان چار درجے نیچے جا کر دسویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں۔

ایلسٹر کک کو بھی عمدہ کارکردگی کا انعام ملا ہے اور وہ چار درجے ترقی پا کر نویں نمبر پر آگئے ہیں۔

ویسٹ انڈیز کے خلاف ڈبل سنچری بنانے والے ویرات کوہلی دو درجہ ترقی پا کر 12ویں نمبر پر آ گئے ہیں جبکہ اسد شفیق مایوس کن کارکردگی کے بعد دو درجہ نیچے چلے گئے ہیں۔

Source. Dawn News

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz