سرفہرست4 ٹیموں میں شمولیت ہماراہدف ہے:آرتھر

05 October 2016

ابوظہبی: پاکستان کرکٹ ٹیم کےہیڈ کوچ مکی آرتھر نے ویسٹ انڈیز کو ایک اور وائٹ واش کرتے ہوئے ایک روزہ درجہ بندی میں سرفہرست چار ٹیموں میں شامل ہونے کو اپنا ہدف قرار دے دیا۔

پاکستانی ٹیم نے ویسٹ انڈیز کے خلاف رواں سیریز کےابتدائی دو میچوں میں کامیابی حاصل کرکے ایک روزہ سیریز اپنے نام کی ہے جبکہ تیسرے میچ میں کامیابی کی صورت میں درجہ بندی میں آٹھویں پوزیشن آجائے گی۔

مکی آرتھر کا کہنا تھا کہ ‘ہم یہ نہیں سوچتے کہ ہم سیریز جیت چکے ہیں کیونکہ ہمیں ایک روزہ کرکٹ میں ایک یونٹ کی حیثیت سے کئی اہداف حاصل کرنے ہیں اور سرفہرست چاروں ٹیموں سے ایک ہوں’۔

ورلڈ ٹی ٹوئنٹی 2016 میں قومی ٹیم کی شکست کے بعد ہیڈ کوچ وقاریونس نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دیا تھا جس کے بعد جنوبی افریقہ سے تعلق رکھنے والے مکی آرتھر کو ہیڈ کوچ مقررکیا گیا تھا۔

انگلینڈ کے خلاف اپنی پہلی ایک روزہ سیریز میں مکی آرتھر کو 4-1 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

مکی آرتھر کا کہناتھا کہ ‘ہمیں کھلاڑیوں کو ایک گروپ کی حیثیت سے اعتماد دینا ہوگا اور انھیں بہتری لانے کے لیے یاد دہانی کراتے رہیں گے’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘ہمیں اپنے تعین کردہ اہداف کے حصول کو یقینی بنانا ہوگا اور اسی صورت میں ہی مطمئن ہوں گے جو کہ ہم سرفہرست پوزیشن پر جاسکتے ہیں، آٹھویں نہیں بلکہ سرفہرست چارٹیموں میں شامل ہوں جبکہ اس کو برقرار رکھنے کے لیے اور اس ہدف کو حاصل کرنے کے لیے ہمیں بہت کام کرنا ہے’۔

انھوں نے کہا کہ ‘اپنے اہداف کی جانب پیش قدمی کو دیکھتے ہوئے بہت خوشی ہورہی ہے’۔

مکی آرتھر کا ماننا ہے کہ پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو اس سیریز میں سخت دباؤ میں رکھا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘میں چاہتا ہوں کہ لوگ لکھیں کہ ہم نے اچھا کھیلا ہے نہ کہ ویسٹ انڈیز نے برا کھیلا ہے کیونکہ وہ ایک اچھی ٹیم ہے اور ہم نے ان کو دباؤ میں رکھا’۔

پاکستان کے کپتان اظہرعلی ناقص فارم سے دوچار ہیں تاہم ہیڈ کوچ کو امید ہے کہ وہ جلد فارم میں واپس آئیں گے۔

اظہرعلی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ‘اظہرعلی نیٹ میں نہایت اچھی بیٹنگ کررہے ہیں، ان کو صرف ایک آغاز اور وکٹ پر ٹھہرنے کی ضرورت ہے جس کے بعد رنز بنیں گے’۔

Source. Dawn News

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz