پہلی سے بارہویں جماعت تک قرآن پاک کی تعلیم لازمی قرار دینے کا فیصلہ

09 June 2016

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی حکومت نے پہلی سے بارہویں جماعت تک سکولوں اور کالجوں میں قرآن پاک کی تعلیم لازمی قرار دینے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔

وزارت تعلیم و تربیت نے قران پاک کو تعلیمی نصاب میں شامل کرنے کیلئے سفارشات تیار کرکے صوبوں کو ارسال کردی ہیں۔ وزیر مملکت برائے تعلیم و تربیت بلیغ الرحمان کا کہنا ہے کہ صوبوں نے مشاورت کیلئے وقت مانگا ہے اور صوبے وفاقی کی تجاویز کا جائزہ لے کر جلد آگاہ کریں گے۔
انہوں نے بتایا کہ سکولوں میں پہلی سے چھٹی جماعت تک ناظرہ قرآن پاک پڑھایا جائے گا جبکہ ساتویں سے بارہویں جماعت تک قرآن پاک ترجمہ کے ساتھ پڑھایا جائے گا۔ساتویں سے دسویں جماعت تک واقعات پر مبنی سورتیں پڑھائی جائیں گی اور دسویں سے بارہویں جماعت تک احکامات پر مبنی سورتیں پڑھائی جائیں گی۔

اس موقع پر اسلامی نظریاتی کونسل کے چیئرمین مولانا محمد خان شیرانی کا کہنا تھا کہ وزارت تعلیم کا قرآن پاک کی تعلیم ضروری قرار دینے کا اقدام احسن ہے اسلامی نظریاتی کونسل کے صوبوں اور وفاق سے مربوط روابط ہیں اور اس مقصد کے حصول کیلئے مکمل تعاون کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ پہلی سے بارہویں جماعت میں سے ہر ایک جماعت کیلئے روزانہ 15 منٹ قرآن پاک کی تعلیم کیلئے مختص ہوں گے۔

Source. Daily Pakistan

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz