’ ڈرون حملے افسوسناک ہیں، بند ہونے چاہئیں‘

01 June 2016

اسلام آباد: چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف کا کہنا ہے کہ ڈرون حملے افسوسناک ہیں، اور انہیں بند ہونا چاہیے۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کے دوران جنرل راحیل شریف نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں حاصل کی گئی کامیابیوں کو برقرار رکھنا ہے اور دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں ناکامی ہمارا آپشن نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب کامیابی سے آگے بڑھ رہا ہے، جنوبی اور شمالی وزیرستان میں تعمیر و ترقی کا عمل تیزی سے جاری ہے جبکہ بلوچستان کی صورتحال میں بھی بہتری آرہی ہے۔

جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ پاک ۔ چین اقتصادی راہداری کا منصوبہ ملک کی ترقی کا اہم باب ہے، جو ہر صورت میں مکمل ہوگا۔

آرمی چیف نے اجلاس کے بعد صدر سے ملاقات کی، ممنون حسین اور جنرل راحیل شریف خاصی دیر تک قومی امور پر غیر رسمی گفتگو کرتے رہے، جس دوران آرمی چیف سے صدر سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ کو بھی قبائلی علاقوں میں ساتھ لے کر جائیں گے۔

جنرل راحیل شریف نے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار، مشیر خارجہ امور سرتاج عزیز، متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے رہنما میاں عتیق, جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن، جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق اور عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے رہنما الیاس بلور سے بھی ملاقات کی۔

اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق اور چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے آرمی چیف کو پارلیمنٹ ہاؤس سے رخصت کیا۔

قبل ازیں صدر ممنون حسین کا بھی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے دوران کہا تھا کہ بلوچستان اور کراچی میں امن کے حوصلہ افزا نتائج سامنے آئے ہیں، آپریشن ضرب عضب کے اہداف جلد حاصل ہونے کی امید ہے جس کے بعد اس کے مثبت نتائج کو برقرار رکھنے پر بھی توجہ دینا ہوگی۔

انہوں نے پاک ۔ اقتصادی راہداری منصوبے کا بھی ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری قومی منصوبہ ہے جس سے معیشت کو استحکام ملے گا اور اس کی تکمیل کے لیے تمام جماعتوں کو ہاتھ بٹانا چاہیے۔

یاد رہے 6 مئی کو امریکا نے ایک بار پھر پاکستانی حدود میں ڈرون حملہ کرتے ہوئے افغان طالبان کے سابق امیر ملا اختر منصور کو نشانہ بنایا تھا۔

ڈرون حملے کے خلاف دفتر خارجہ نے امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل کو طلب کرکے احتجاج ریکارڈ کرایا، جبکہ وزیر اعظم نواز شریف اور آرمی چیف نے بھی ڈرون حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے پاکستان کی خود مختاری کے خلاف قرار دیا تھا۔

Source. Dawn News

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz