کراچی مٰیں ایک ہی روز 3 فیکٹریوں میں آتشزدگی سے کروڑوں کا سامان جل کر خاکستر، شہر بھر کے فائر ٹینڈر طلب

24 June 2016

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک )کراچی کےمختلف علاقوں میں تین مقامات پر فیکٹریوں میں آگ بھڑک اٹھی جس کے باعث لاکھوں کا سامان جل کر خاکستر ہو گیا۔ایک ہی روز میں آتشزدگی کے 3 واقعات نے فائر برگیڈ کو مشکلات میں ڈال دیا ۔آگ بجھانے کےلیے نیوی،ایئرفورس کے فائر ٹینڈرزبھی پہنچادیے گئے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کراچی کے علاقے سائٹ ایریاحبیب بنک چورنگی میں کپڑے کی فیکٹری میں آگ بھڑک اٹھی جس سے لاکھوں کا سامان جل کر خاکستر ہو گیا۔اس کے علاوہ گلبائی میں ٹائروں کے گودام میں آگ لگنے سے کیمیکل سمیت سینکڑوں ٹائر جل کر خاکستر ہو گئے۔ آگ اس قدر شدید ہے کہ اس نے قریبی فیکٹری کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ قریبی فیکٹری میں جنریٹر تیار کیے جاتے ہیں اور آگ سے کروڑوں روپے مالیت کے متعدد جنریٹر بھی جل کر ضائع ہو گئےجبکہ آگ سے علاقے میں دھویں کے گہرے سیاہ بادل چھاگئے۔گودام 2 ایکڑ پر محیط ہے جو ٹائروں سے بھرا ہوا تھا۔

سائٹ ایریا حبیب بنک چورنگی میں کپڑے کی فیکٹری میں اچانک آگ بھڑک اٹھی جس نے دیکھتے ہی دیکھتے عمارت کے بڑے حصے کو لپیٹ میں لے لیا تاہم واقعے کے بعدعملے کو عمارت سے باہر نکال لیا گیا ہے اور فائر برگیڈ اور ریسکیو ٹیموں نے موقع پر پہنچ کر چار گھنٹے کی طویل جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پا لیا۔

فائر برگیڈ حکام کا کہنا ہے کہ فیکٹری میں لگنے والی آگ تیسرے درجے کی تھی جس پر قابو پانے کیلئے شہر بھر کے فائر ٹینڈر اور سنائکر کو طلب کیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آگ فیوزنگ ڈیپارٹمنٹ میں لگی ہے مگر آگ لگنے کے بعد فیکٹری میں موجود گیس پائپ لائن کو بند نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے آگ نے شدت اختیار کر لی۔

دوسری جانب گلبائی میں ٹائروں کے گودام میں لگنے والی آگ پر قابو پانے کی کوشش جاری ہے مگرآگ بجھانے کیئے استعمال ہونے والا فوم اور پانی کی کمی کی وجہ سے امدادی کاموں میں مشکلات کا سامنا ہے۔فائر برگیڈ حکام کا کہنا ہے کہ یہ تیسرے درجے کی آگ ہے جسے بجھانا مشکل ہوتا ہے۔ آگ لگنے سے سینکڑوں ٹائر جل چکے ہیں جس سے علاقے پر دھواں کے سیاح بادل چھا گئےاور ٹائروں کی بددبو سے سانس لینے میں بھی مشکلات کا سامنا ہے۔ دھواں کئی کلو میٹر دور تک پھیل چکا ہے جس نے دیگر علاقوں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آگ کو تین سے چار گھنٹے گزر چکے ہیں مگر تاحال اس پر قابو نہیں پایا جا سکا اور آگ کی شدت میں مزید اضافہ ہو رہا ہے جبکہ آگ کے باعث پہلے ہی فیکٹری میں موجود کروڑوں کا سامان جل کر خاکستر ہو چکا ہے۔آگ بجھانے کےلیے نیوی اورایئرفورس کے فائر ٹینڈرزبھی پہنچادیے گئے۔ فائر برگیڈ حکام کا کہنا ہے کہ آگ شارٹ سرکٹ کے باعث لگی ہے۔ اس کے علاوہ کراچی کے علاقے شیر شاہ میں بھی آگ لگنے کی خبر ہےجس پر قابو پانے کی کوشش جاری ہے۔

Source. Daily Pakistan

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz