آرمی چیف کی زیر صدارت کراچی کی صورتحال پر اہم اجلاس ،رینجرز کو توسیع دینے اور دہشت گردوں کے خلاف آپریشن تیز کرنے کا فیصلہ

26 June 2016

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک )چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف کی زیر قیادت کراچی میں امن و امان کی صورتحال پر اہم اجلاس میں رینجرز کو توسیع دینے ،دہشت گردوں کے خلاف آپریشن تیز کرنے کا فیصلہ کیا گیا اور اس دوران اویس علی شاہ کے اغواء اور امجد صابری کے قتل کے بارے میں تفصیلی جائزہ لیا گیاہے۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق کور ہیڈ کوارٹر میں آرمی چیف کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار ،وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ ،گورنر سندھ عشرت العباد ،کور کمانڈر کراچی نوید مختار اور ڈی جی آئی ایس آئی رضوان اختر سمیت دیگر سیاسی و عسکری رہنما شرکت کی ۔

اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ نے رینجرز کو توسیع دینے کا فیصلہ کیا ۔اجلاس میں مطلوبہ نتائج کے حصول تک کارروائیاں جاری رکھنے ،ٹارگٹڈ آپریشن تیز کرنے ،دہشت گردوں اور سہولت کاروں کے خلاف آپریشن تیز کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے قیام امن کے لیے سندھ حکومت کی کارکردگی کی تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ آپریشن سے حاصل کامیابیاں ضائع نہیں ہونے دیں گے ،اب آپریشن اہم مرحلے میں داخل ہو چکا ہے اس لیے آپریشن کو ہر حال میں منتقطی انجام تک پہنچا یا جائے گا ۔

ان کاکہنا تھا کہ دہشت گردوں ،سہولت کاروں اور مدد گاروں کا گٹھ جوڑ ہر قیمت پر توڑا جائے گا ،انٹیلی جنس معلومات کو مزید فعال بنا یا جائے گا ۔آرمی چیف نے کہا کہ جرائم پیشہ افراد کے معاونین کے نیٹ ورک کو توڑنے کے لیے انٹیلی جنس معلومات پر توجہ دی جائے ۔ان کا کہنا تھا کہ تمام متعلقہ ادارے دہشت گردوں کا پیچھا کر کے ان کے عزائم کو نا کام بنائیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ دہشت گرد کوشش کر رہے ہیں کہ معاشرے کو نفسیاتی طور پر نقصان پہنچا یا جائے ، دہشت گرد اور ان کے سہولت کار تنہائی کا شکار ہو چکے ہیں اس لیے اب وہ آسان اہداف کو نشانہ بنا رہے ہیں ۔

Source. Daily Pakistan

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz