کمر درد آپ کو کیوں نشانہ بناتا ہے؟

17 October 2016

کمر کا درد دنیا بھر کا مسئلہ ہے اور لگ بھگ ہر کسی کو زندگی میں کبھی نہ کبھی اس کا سامنا ہوتا ہے۔

عام طور پر یہ درد پسلی سے نیچے شروع ہوتا ہے اور نیچے تک پھیلتا ہوا محسوس ہوتا ہے جو کہ کافی تکلیف دہ ہوتا ہے۔

مگر یہ ہر کسی کو اپنا نشانہ کیوں بناتا ہے؟

عام طور پر اس کی وجہ آپ کا کام ہوسکتا ہے خاص طور پر اگر آپ بھاری بوجھ اٹھانے یا ریڑھ کی ہڈی کو گھمانے کا کوئی کام کرتے ہیں، اس کے نتیجے میں کمر میں درد مستقل شکایت بن جاتا ہے۔ اسی طرح دن بھر بیٹھے رہنا بھی اس کا خطرہ بڑھاتا ہے خاص طور پر اگر بیٹھنے والی کرسی غیر آرام دہ یا آپ آگے کی جانب جھک کر بیٹھتے ہوں۔

طبی ماہرین کے مطابق خواتین اور نوجوانوں میں اس درد کی وجہ ان کا پرس، بیک بیگ یا بریف کیس ہوسکتا ہے جو کندھوں پر لٹکا ہوا ہو، درحقیقت کمر کا زیریں حصہ بالائی جسم کو سپورٹ کرتا ہے، جس میں اضافی وزن (بیگ وغیرہ) بھی شامل ہے اور اگر بیگ میں بہت زیادہ سامان ہو تو کمر پر بوجھ بڑھ جاتا ہے اور ایسا معمول بنالینے سے کمردرد کی شکایت پیدا ہوجاتی ہے۔

ایک تحقیق کے مطابق اگر آپ سخت ورزش کرنے کے عادی ہیں تو بھی کمردرد کا سامنا ہوسکتا ہے جبکہ بیٹھنے کا انداز بھی اس کی وجہ ہوسکتا ہے، یعنی کمر سیدھی رکھنے کی بجائے آگے کی جانب جھکے رہنا۔

عام طور پر کمردرد لوگوں کو عمر کی تیسری یا چوتھی دہائی میں پہلی دفعہ نشانہ بناتا ہے جس کا خطرہ عمر بڑھنے کے ساتھ زیادہ ہوجاتا ہے تاہم اس کی چند دیگر وجوہات میں موٹاپا، سست طرز زندگی، بھاری بوجھ والی ملازمتیں قابل ذکر ہیں، جو ہر عمر کے افراد کو اس کا شکار بناسکتی ہیں۔

Source. Dawn News

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz