روسی دریا کا رنگ اچانک سرخ ہوگیا

7 September 2016

روس کے علاقے سربیا میں ایک دریا کا پانی پراسرار طور پر اچانک سرخ ہوگیا جس نے وہاں کے رہائشیوں کو دنگ کردیا۔

شمالی سائبریا کے شہر نوریلسک میں بہنے والے دریائے ڈالڈیکان کا پانی اچانک شوخ سرخ رنگ کا ہوگیا اور شک ظاہر کیا جارہا ہے کہ وہ ایک معدنیاتی پلانٹ سے خارج ہونے والے صنعتی فضلے کا نتیج ہوسکتا ہے۔

اس شہر کو دنیا کے آلودہ ترین شہروں میں سے ایک مانا جاتا ہے جس کے ارگرد متعدد فیکٹریان ایک بڑی دھاتی کمپنی کی ہیں۔

اس دریا کی تصاویر روس میں سوشل میڈیا پر جاری ہوی ہیں اور مقامی افراد کا کہنا ہے کہ یہ مسئلہ ایک کارخانے ماڈیزدا میٹل لیورجیکل پلانٹ کی وجہ سے ہوا ہے۔

فوٹو بشکریہ سائبرین ٹائمز

اس پلانٹ کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ وہ دریا کے پراسرار طور پر رنگ بدلنے کے معاملے کا جائزہ لے رہی ہے۔

ان کے بقول ” دریا کے ارگرد ماحولیاتی نگرانی کمپنی کی جانب سے کی جارہی ہے اور اس حوالے سے ہیلی کاپٹرز سے بھی مدد لی جارہی ہے”۔

روسی میڈیا کے مطابق دریا کے پانی کا رنگ بدلنے کے بعد اس پلانٹ سے پروڈکشن بھی کم کردی گئی ہے۔

دوسری جانب مقامی افراد کا کہنا ہے کہ یہ پہلی بار نہیں کہ دریا کا رنگ سرخ ہوا ہے بلکہ سردیوں میں دریا پر جمنے والی برف میں سرخ ہوجاتی ہے۔

Source. Dawn News

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz