بغیر بجلی کے کام کرنے والا ائیرکنڈیشنر

01 June 2016

دنیا بھر میں 2016 میں گرمی کی لہر ریکارڈ توڑ ثابت ہورہی ہے اور ہر گزرتا مہینہ انسانی تاریخ کا گرم ترین قرار پارہا ہے۔

پاکستان میں بھی اب گرمی کی شدت میں اضافہ ہورہا ہے مگر کیا آپ ایسا ائیرکنڈیشنر خریدنا پسند کریں گے جسے چلانے کے لیے بجلی کی ضرورت نہ ہو اور اس کا دن بھر کا خرچہ بھی چند روپے ہو؟

اگر ہاں تو اب ایسا اے سی دستیاب ہے جس کا نام گائیزیر رکھا گیا ہے۔

کک اسٹارٹر سائٹ پر فنڈز اکھٹے کرکے تیار ہونے والے اس اے سی کو چلانے کے لیے درحقیقت پورٹ ایبل بیٹری کو استعمال کیا گیا ہے اور یہ ایک منجمند آئس پیک کی مدد سے چلتا ہے۔

یہ ایک بہت چھوٹا سا اے سی ہے جو آپ کے کمرے کو گھنٹوں تک ٹھنڈا رکھ سکتا ہے۔

یہ بیٹری اور بار بار استعمال ہونے والے آئس پیک کا امتزاج ہے او۵ر اس کو ایک دن میں چلانے کا خرچہ ایک امریکی سینٹ سے بھی کم ہے۔

اس کے اوپر لگا لکڑی کا باکس آئس پیک کو چار گھنٹے تک ٹھنڈا رکھتا ہے جبکہ ہوا کو چاروں جانب پھیلانے کے لیے باکس کے درمیان خلاءرکھا گیا ہے۔

اس میں لگا پنکھا کمرے کی ہوا کو آئس پیک میں منتقل کرتا ہے جو فوری طور پر باہر ٹھنڈی ہوکر خارج ہوتی ہے۔

اے سی کو چلانا ہو تو اس کا اوپری حصہ نیچے والے سے لگانا ہوتا ہے جبکہ یہ ایک سنگل چارج پر لگاتار چار گھنٹے تک چل سکتا ہے۔

اس کی بیٹری کو آپ اسمارٹ فون کی طرح کسی بھی ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر یا لیپ ٹاپ پر مائیکریو یو ایس بی کے ذریعے چارج کرسکتے ہیں۔

کک اسٹارٹر پر آپ اسے کچھ کم قیمت پر حاصل کرسکتے ہیں تاہم ریٹیل میں اس کی قیمت 106 ڈالرز رکھی جائے گی۔

Source. Dawn News

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz