کابل میں خودکش دھماکہ، ’28 ہلاک، 327 زخمی‘

19 April 2016

افغانستان کے دارالحکومت کابل کے مرکزی علاقے میں ایک خودکش دھماکے میں 28 افراد ہلاک اور سوا تین سو سے زیادہ زخمی ہوئے ہیں۔

افغان وزارتِ داخلہ کے ترجمان صادق صدیقی کے مطابق منگل کی صبح پل محمد خان میں ہونے والا یہ حملہ خودکش دھماکہ تھا اور حملہ آور کار میں سوار تھا۔

طالبان نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ واضح رہے کہ ایک ہفتے قبل ہی طالبان نے موسم بہار میں حملے شروع کرنے سے متعلق خبردار کیا تھا۔

ملک کے صدر اشرف غنی کے دفتر سے جاری ہونے والے ایک بیان میں اس حملے کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی گئی ہے۔

صدارتی دفتر سے جاری ہونے والے بیان میں متعدد افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی گئی ہے اور وزارتِ صحت کا کہنا ہے کہ دھماکے میں 28 افراد ہلاک اور 327 زخمی ہوئے ہیں۔

جس جگہ دھماکہ ہوا ہے وہ رہائشی علاقہ ہے اور اس کے قریب ہی افغان وزارتِ دفاع کی عمارت اور امریکی سفارت خانہ بھی واقع ہے جہاں دھماکے کے بعد سائرن بھی بجائے گئے۔ تاہم سفارت خانے کے اہلکاروں کا کہنا ہے کہ اس واقعے سے سفارت خانہ متاثر نہیں ہوا۔

دھماکے کی جگہ سے سیاہ دھویں کے بادل اٹھتے دیکھے گئے ہیں اور سکیورٹی اور امدادی اداروں کے اہلکار جائے وقوع پر پہنچ گئے ہیں۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ دھماکے کے بعد متعدد مسلح افراد ملک کے خفیہ ادارے نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سکیورٹی کی ایک عمارت میں داخل ہوتے دیکھے گئے ہیں۔

رواں برس کے ابتدائی چند ماہ میں شدت پسندوں نے کابل کو متعدد بار خودکش بم حملوں کا نشانہ بنایا ہے جن میں درجنوں افراد ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔

Source . BBC Urdu

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz