کیا فجر کی اذان کے دوران پانی پیا جاسکتا ہے؟ متحدہ عرب امارات کے مفتی اعظم نے واضح جواب دے دیا

10 June 2016

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) روزہ رکھنے میں قدرے تاخیر ہو جائے تو بعض لوگ اذان شروع ہو جانے کے باجود بھی پانی پی لیتے ہیں، لیکن کیا یہ درست عمل ہے؟ نیوز سائٹ ایمرٹس 247 نے دبئی کے مفتی اعظم ڈاکٹر علی احمدمشائل کے سامنے یہی سوال رکھا تو ان کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کیلئے ضروری ہے کہ وہ سحرو افطار کے اوقات کا خاص خیال رکھیں اور بہتر یہ ہے کہ اذان فجر سے پانچ، دس منٹ قبل ہی کھانا پینا بند کر دیا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر اذان شروع ہو جانے کے بعد کسی نے پانی پیا تو اسے رمضان کے بعد دوبارہ روزہ رکھنا ہو گا۔

Source. Daily Pakistan

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz