مکہ میں بھگدڑ، 18 معتمرین زخمی

2 July 2016

ریاض : مسلمانوں کی مقدس ترین سرزمین مکہ کی مسجد الحرام میں بھگدڑ کے نتیجے میں 18 معتمرین زخمی ہوگئے۔

سعودی میڈیا خی رپورٹس کے مطابق بھگدڑ کا واقعے جمعے اور ہفتے کی درمیانی شب پیش آیا جب بڑی تعداد میں مسلمان شب قدر کی تلاش میں رمضان المبارک کی 27ویں رات کو عبادت کے لیے اکھٹے ہوئے تھے۔

رپورٹ کے مطابق زخمی ہونے والے تمام افراد کو موقع پر ہی ابتدائی طبی امداد فراہم کردی گئی تاہم کسی بھی شخص کو زیادہ زخم نہیں آئے جس کے لیے اس کو ہسپتال منتقل کرنے کی ضرورت پیش آئے۔

واضح رہے کہ ہر سال ہزاروں معتمرین رمضان المبارک کے مہینے میں عمرے کی سعادت حاصل کرنے مکہ آتے ہیں، خاص طور پر رمضان کے آخری عشرے میں یہاں لوگوں کا رش بہت زیادہ بڑھ جاتا ہے۔

مسلمان رمضان المبارک کے آخری عشرے میں شب قدر کو تلاش کرتے ہیں اور اس سلسلے میں ذکر و عبادات کا خصوصی اہتمام کیا جاتا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ برس ستمبر میں بھی حج کے موقع پر بھگدڑ کی وجہ سے 2ہزار سے زائد عازمین حج شہید ہوگئے تھے جبکہ سعودی عرب نے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 769 بتائی تھی۔

اس طرح کے واقعات کی روک تھام کیلئے سعودی حکام نے فیصلہ کیا ہے کہ اس سال حج کے موقع پر عازمین کو ‘برقی کڑا’ پہننا ہوگا جس میں ان کی ذاتی معلومات، رہائشی پتہ اور میڈیکل ریکارڈ موجود ہوگا۔

Source. Dawn News

Leave a Reply

Be the First to Comment!


wpDiscuz